تازہ ترین

فلسفہ

فلسفہ

سید نصیر شاہ

فلاسفی Philosophy  بھی یونانی لفظ ہے۔ اسکے اصطلاحی معنی ہیں ہر ایک کودوسری چیز پر غور و فکر کر کے اسکی ماہیت معلوم کرنے کی کوشش کرنا کسی چیز کے متعلق سوچنا کہ یہ کیا ہے ؟ کیوں ہے ؟ ایک فلسفی ایک چیز کو سامنے رکھ کر مختلف سو الات ترتیب دیتا ہے اور پھر انکے جوابات سوچتا ہے ۔ سوچ کا یہ سارا عمل فلسفہ میں داخل ہے ۔ فلسفہ سائنس کے قریب ہے لیکن بہر حال سائنس سے مختلف علم ہے ۔ سائنس مادی چیزوں پر سوالات ترتیب دے کر انکے جوابات حاصل کرتی ہے۔ اس کے جوابات درست ہوتے ہیں کیونکہ انہیں تجربہ کی کسوٹی پر کھا جا سکتا ہے ۔ لیکن فلسفہ کے جوابات تجربہ کی کسوٹی پر اس طرح نہیں پر کھے جاسکتے ۔ فلسفہ ایک انتہائی وسیع علم ہے اور اسکے مختلف شعبے ہیں تاہم ہر شعبہ کی بنیاد غور و فکر پر ہے۔ فلسفہ کی وسعت میں نفسیات Pscycology جیسے نفسی اور انسانی ذات کے مطالعہ کے موضوعات بھی آجاتے ہیں اور تمدن و عمرانیات کے مضامین بھی آجاتے ہیں۔اس طرح گو یا فلسفہ انسانی ذات اور انسانی رویوں کے ساتھ اشیائے کائنات اور خود کائنا ت کا مطالعہ بھی ہے۔ مابعد الطبیعیات پر تو سائنس خامو ش ہوجاتی ہے مگر فلسفہ اپنی استطاعت کے مطابق ان پر سو چتا اور ان کے جوابات حاصل کر نے کی کوشش کرتا ہے۔ ایک فلسفی آزاد انہ غور و فکر کرتا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ سوچ میں آزاد ہوتا ہے یوں نہیں ہوتا کہ وہ پہلے سے قائم کردہ کسی رائے کو سوچنے اور اس رائے کی حقانیت پر دلائل ڈھونڈھنے بیٹھ جائے ۔فلسفی چونکہ اپنی سوچ میں آزاد ہے اس لئے جب وہ آمادہ ¿ تحقیق ہوتا ہے تو اپنا تمام سابقہ عقیدہ جھٹک دیتا ہے اور پوری طرح غور و فکر کر کے اپنی آزادنہ رائے قائم کرتا ہے۔ دنیا کی ہر قوم میںفلا سفر مختلف اوقات میں اپنے نتائج ِفکر سامنے لاتے رہے ہیں ۔قدیم فلسفہ میں ہندو فلا سفر ، یونانی فلا سفر، سر فہر ست تھے ۔جدید فلا سفر وںمیں یو رپ کے فلسفی معروف ہوئے ۔

2016 - منصور آفاق